»

مطالب ویژه

عالمی مجلس تقریب مسالک اسلامی کے نمائندے مولانا سید عبدالحسین کشمیری نے جامع مسجد سونہ پاہ بیروہ میں جمعہ کے دوسرے خطبے میں مسلمانوں کے درمیان 90 فیصد سے زائد مشترکات اور 10 فیصد سے کم اختلافات کی وضاحت کرتے ہوئے مذہبی و مسلکی جھگڑے کو نامطلوب قرار دیتے ہوئے کہا کہ مذہب اور مسلک کے نام پر صرف مناظرہ، مباہلہ اور مکالمہ دیکھنے کو ملنا چاہئے نہ کہ لڑائی جھگڑا کیونکہ صرف رشتوں اور حقوق کو لے کر اختلافات اور جگڑے کی گنجائش ہے لیکن مسلک اور مذہب پر لڑنا جھگڑنا عقل و انصاف سے دور ہے،

ہندوستان زیر زنتظام کشمیر کے مشرقی ضلع بارہمولہ کے علاقے نوگام سوناواری کے نیو برائٹ سٹار پبلک سکول کے خصوصی دعوت پر عبدالحسین کشمیری نے اتحاد و تقریب کی ثقافت کوسماج میں ترویج اور حفاظت کی اہمیت بیان کرتے ہوئے حضرت امام علی خامنہ ای کے حالیہ بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ آپ نے فرمایا: حضرت امام خمینی (رہ) اور دیگر بزرگ علماء نے ہمیشہ اسلامی اتحاد کی حفاظت پر تاکید کی ہے لہذا وہ شیعیت جس کی تبلیغ لندن اور امریکہ کے میڈیا کے ذریعہ اختلافات ڈالنے کی غرض سے کی جارہی ہو وہ حقیقی شیعیت نہیں ہے۔

اتحاد بین المسلمین پر ہر مسلمان کو پہل کرنا لازمی ہے ۔ لیکن جو ذمہ دار لوگ ہیں اور جو اعلیٰ عہدوں پر فائز ہیں ان پر زیادہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اتحاد بین المسلمین کے حوالہ سے اپنی خدمات انجام دیں ۔ ان کو چاہئے کہ اپنے افکار اور نظریات کو صحیح ڈھنگ سے عوام کے سامنے پیش کریں.

نیوزنور30اگست2013:ٹنگمرگ اور گلمرگ کے اہل سنت علماء کی دعوت پر جامع مسجد گلمرگ میں اتحاد و تقریب کے سفیرحجت الاسلام حاج عبدالحسین کشمیری نے نمازگزاروں  سے خطاب کے دوران کہا:اسلام پیغمبر آخرالزمان حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم،قرآن مجید اور مسلمان کے ترجمان کا نام ہےجو ایکدوسرے کی پہچان کرواتے ہیں نبی کریم (ص) قرآن  مجید کا پتہ فرماتے ہیں اور قرآن مجید مسلمان کا اور مسلمان نبی کریم (ص)کالیکن مسلمان غیرشعوری طور اسلام دشمن  طاقتوں کے منصوبوں کےشکار ہونے کے سبب ترجمان اور اصل دین کا عامل بننے کے بجائے جزئی اور فروعی مسائل کو لے کر ایک دوسرے کی تحقیر یا تکفیر میں لگ گئے ہیں

 

اسلام نبی(ص)قرآن اورمسلمان کا ترجمان ہے  لیکن ہم نے فروعی مسائل سے ان میں دوریاں پیداکی ہے:حاج عبدالحسین کشمیری
نیوزنور30اگست2013:ٹنگمرگ اور گلمرگ کے اہل سنت علماء کی دعوت پر جامع مسجد گلمرگ میں اتحاد و تقریب کے سفیرحجت الاسلام حاج عبدالحسین کشمیری نے نمازگزاروں  سے خطاب کے دوران کہا:اسلام پیغمبر آخرالزمان حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم،قرآن مجید اور مسلمان کے ترجمان کا نام ہےجو ایکدوسرے کی پہچان کرواتے ہیں نبی کریم (ص) قرآن  مجید کا پتہ فرماتے ہیں اور قرآن مجید مسلمان کا اور مسلمان نبی کریم (ص)کالیکن مسلمان غیرشعوری طور اسلام دشمن  طاقتوں کے منصوبوں کےشکار ہونے کے سبب ترجمان اور اصل دین کا عامل بننے کے بجائے جزئی اور فروعی مسائل کو لے کر ایک دوسرے کی تحقیر یا تکفیر میں لگ گئے ہیں۔

عالمی اردو خبر رساں ادارہ "نیوز نور" کی رپورٹ کے مطابق امیر کاروانِ اسلامی جموں وکشمیر مولانا غلام رسول حامی نے اس موقع پر سماج میں پھیلی بے راہ روی جن میں شراب و دیگر منشیات بھی شامل ہیں کو اُم الخبائث قرار دیتے ہوئے کہا کہ جموں وکشمیر کی سرزمین کو اس برائی سے پاک کر کے ہی دم لیں گے ۔انہوں نے کہا کہ ہر مذہب و مسلک کے لوگوں پر یہ فرض عائد ہوتا ہے کہ اس بیماری کا قلع قمع کرنے کیلئے متحد ہو کر میدان عمل میں کو د پڑیں ۔انہوں نے کہا کہ صرف سیمنار تک محدود رکھنا ہمارا ہدف نہیں ہے بلکہ ملت کے ہر فرد تک پہنچ کر اس بدعت کے خلاف ایک آواز بن کر کامیابی سے ہمکنار ہو کر رہیں گے۔انہوں نے مسلمانوں کے اتحاد کو اسلامی کا بنیادی فریضہ قرار دیکر کہا کہ سماج دشمن عناصر کا مقابلہ کرنا ہر فرد اُمت کا فرض ہے۔
نیوزنور 22اکتوبر2013: مجمع جہانی اہل بیت (ع) اور مجمع جہانی تقریب مذاہب اسلامی کشمیر کے نمائندے کا انٹرویو میں کہنا تھا کہ ایک طرف امام خامنہ ای اکیلے ہیں جو مسلمانوں کو یکجا اور متحد کرنے کے لئے اپنے تمام تر امکانات عالم اسلام کے سامنے رکھے ہوئے ہیں اور دوسری طرف پوری دنیا ہے، استکباری قوتیں ہیں اور مسلمانوں کی نام نہاد شخصیتیں ہیں جو مسلمانوں کے لئے باعث ننگ و عار ہیں اور ان سے اسلام کو صرف نقصان پہنچتا آ رہا ہے۔
نیوز نور 25 اکتوبر 2013: برصغیر کے متعدد چھوٹے بڑے شہروں میں عید سعید غدیر انتہائی مذہبی جوش و خروش اور تزک و احتشام کے ساتھ منائی گئی۔ ان روح پرور اجتماعات میں شیعہ سنی عوام نے شرکت کر کے حضرت امیرالمومنین علی ان ابیطالب (ع) کے تئیں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے امت مسلمہ کے اتحاد کیلئے دعائیں مانگی۔
نیوز نور01 نومبر 2013:ہندوستان زیر انتظام کشمیر کے وسطی ضلع بڈگام میں 24 ذی الحجہ کو شروع ہوئے 14 رووہ نورانی صحافت کارگاہ کے تیسرے دن علماء و دانشوروں نے مسلکی اختلافات پر چڑھائی گئی دھول کی صفائی کے غرض سے عملی اقدام کرتے ہوئے آج 26 ذی الحجہ روز شہادت خلیفہ دوم حضرت عمر رضی اللہ عنہ منانے کا اہتمام کیا۔
کشمیر میں جاری 14 روزہ نورانی صحافت ورکشاپ میں شرکاء کا بیان:
کشمیر میں 14روزہ نورانی صحافت کے چھٹے روز علماء و مفکرین کا اظہار خیال:
1 2 
این سایت متعلق است به 
قدرت گرفته از سایت ساز سحر